Poetry

hamein jab kaam se fursat milegi | Azeem Kamil

Spread the love

ہمیں جب کام سے فرصت ملے گی
تمہیں اُس وقت ہی چاہت ملے گی

جنازے پر ضرور آنا ہمارے
وہاں تم کو نئی عبرت ملے گی

ہماری دھڑکنوں کو سننے والے
یہاں ہر پل تمہیں حیرت ملے گی

روایت سے بھلا کب منحرف ہیں
ان آنکھوں میں مگر جدت ملے گی

تمہارا نام کتبے پر لکھا ہے
ہماری قبر کو شہرت ملے گی

بہاولپور سے اظہر نام لینا
تمہیں ہر حلقے میں عزت ملے گی

ہمیں کب عید سے مطلب ہے کامل
اسے دیکھیں گے تو راحت ملے گی

عظیم کامل

Read also : dun main taskin ruh ko apni | Azeem Kamil

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *