Poetry

dun main taskin ruh ko apni | Azeem Kamil

Spread the love

دوں میں تسکین روح کو اپنی
مجھ کو کوئی خبر تو دو اپنی

مُسکرانا بنا ہے تیرے لیے
مستیوں میں مگن رہو اپنی

جو منافق ہیں اُن سے دور رہو
دھڑکنوں کی سدا سنو اپنی

تم کو اِک اور بھی نصیحت ہے
سب کی سُن لو مگر کرو اپنی

اپنا رونا لگا ہی رہنا ہے
تم سناؤ نا، کچھ کہو اپنی

عظیم کامل

Also read : hamein jab kaam se fursat milegi | Azeem Kamil

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *