Poetry

ishq ke paun dho kar aya hun | Azeem Kamil

Spread the love

عشق کے پاؤں دھو کے آیا ہوں

آج ملتان ہو کے آیا ہوں

 

رات کاٹی ہے جاگ کر میں نے

تیری آنکھوں میں سو کے آیا ہوں

 

اُس کی یادوں کے بہتے دریا میں

خود کو سارا بھِگو کے آیا ہوں

 

نفسیاتی ہے مسئلہ شاید

درو دیوار دھو کے آیا ہوں

 

خار ہی خار ہیں جہاں کامل

میں وہاں سے بھی ہو کے آیا ہوں

 

عظیم کامل

Also read : hamein jab kaam se fursat milegi | Azeem Kamil

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *