Poetry

Tujh se kya rabte huwe mere | Azeem Kamil

Spread the love

تجھ سے کیا رابطے ہوئے ہیں مرے

یار دُشمن بنے ہوئے ہیں مرے

 

جِسم یعنی بنا ہوا ہے باغ

زخم اِس میں کِھلے ہوئے ہیں مرے

 

اچھے شاعر ہیں جو علاقے میں

اُنگلیوں پر گِنے ہوئے ہیں مرے

 

لمس کی کیجئے زرا بارش

ہونٹ صحرا بنے ہوئے ہیں مرے

 

میں نے سچ بات کیا کہی اُن سے

لوگ پیچھے پڑے ہوئے ہیں مرے

 

پھول کِیچڑ میں کِھل گئے کامل

وہ گلے سے لگے ہوئے ہیں مرے

 

عظیم کامل

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *