Poetry

Kab mujhe chahe hai bhala sab kuch | Azeem Kamil

Spread the love

کب مجھے چاہیے بھلا سب کچھ

ساتھ کچھ کچھ ہے آپ کا سب کچھ

 

تم سے باتیں ہزار کرنا تھیں

ایک پل نے بھلا دیا سب کچھ

 

اس نے غصے میں پوچھا کون ہوں میں

میں نے آرام سے کہا سب کچھ

 

اس سے باتوں میں ایسی بات ہوئی

اور پھر دھول ہو گیا سب کچھ

 

تم کہانی نہیں سمجھ پائے

کہ گئے ہو برا بھلا سب کچھ

 

تم اسے راز ہی رکھو کامل

مجھ کو پہلے سے ہے پتا سب کچھ

 

عظیم کامل

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *