Art and EntertainmentBollywoodInternationalNewsUrdu News

فائیوجی ٹیکنالوجی کیخلاف درخواست دینے پر جوہی چاولہ کو 20لاکھ روپے جرمانہ

Spread the love

 

نئی دہلی: بھارتی ہائی کورٹ نے 5جی ٹیکنالوجی کے خلاف درخواست دینے پر بالی ووڈ اداکارہ جوہی چاؤلہ
پر 20لاکھ روپے جرمانہ عائد کردیا

چند روز قبل اداکارہ جوہی چاؤلہ نے بھارت میں فائیو جی ٹیکنالوجی کے استعمال کے خلاف مقدمہ درج کروایا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ ملک کی ترقی یا ٹیکنالوجی کے استعمال کے خلاف نہیں لیکن فائیو جی ٹیکنالوجی کے استعمال سے تابکاری کا اخراج انسانی جانوں کے لیے خطرناک ہے۔ یہی وجہ ہے کہ انہوں نے بھارت میں فائیوجی ٹیکنالوجی کے استعمال کو روکنے کے لیے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹایا تھا۔

تاہم دہلی ہائی کورٹ نے جمعہ کے روز ہونے والی سماعت میں اداکارہ کی جانب سے دائر کی جانے والی درخواست کو قانون کے عمل کا غلط استعمال قرار دیتے ہوئے اداکارہ کی درخواست کو مسترد کردیا اوراسے سستی شہرت کے لیے کیا جانے والا اقدام قرار دیتے ہوئے ان پر 20لاکھ روپے جرمانہ عائد کردیا۔
یہ بھی پڑھیں: جوہی چاولہ فائیو جی ٹیکنالوجی کیخلاف میدان میں آگئیں

بھارتی میڈیا کے مطابق دہلی ہائی کورٹ کے جج جسٹس جے آر مدھا نے دوران سماعت مقدمے کو عیب دار قرار دیا اور اسے تکنیکی بنیادوں پر مسترد کرتے ہوئے کہا مدعیوں نے قانون کے عمل کا غلط استعمال کیا جس کے نتیجے میں عدالتی وقت ضائع ہوا۔

عدالت نے مدعیوں پر 20لاکھ روپے جرمانہ عائد کرتے ہوئے انہیں ایک ہفتے کے اندرجرمانہ دہلی اسٹیٹ لیگل سروسز اتھارٹی کے پاس جمع کروانے کی ہدایت کی ہے۔ اور اگر مدعیوں نے ایک ہفتے کے اندر جرمانے کی رقم نہیں بھری تو ڈی ایل ایس اے قانون کے مطابق وصولی کرے گا۔ عدالت نے بتایا یہ جرمانہ سڑک پر ہونے والے حادثے کے متاثرین کی مدد کے لیے استعمال کیا جائے گا۔

عدالتی فیصلے کے مطابق مدعیوں نے یہ مقدمہ پبلسٹی (تشہیر) کے لیے دائر کیا ہے جو اس حقیقت سے واضح ہے کہ مدعی نمبر ایک (جوہی چاؤلہ) نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر کیس کی کارروائی سے متعلق لنکس شیئر کیے تھے جس سے بار بار عدالتی کارروائی میں خلل پڑتا ہے۔

 

 

 

 

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *