NewsPakistanUrdu News

اپوزیشن نے بجٹ روکنے کیلیے بلوچستان اسمبلی کو تالے لگادیے، پولیس سے جھڑپیں

Spread the love

کوئٹہ: اپوزیشن ارکان نے بلوچستان اسمبلی کے داخلی راستے پر تالہ لگا دیا ، جس کے نتیجے میں پولیس سے جھڑپیں ہوگئیں۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق ، بجٹ میں نظرانداز ہونے کے خلاف بلوچستان میں اپوزیشن ارکان نے احتجاج کیا اور اپوزیشن ممبران نے بلوچستان اسمبلی کے داخلی راستے پر تالہ لگا دیا۔

حزب اختلاف کے ممبروں کا کہنا ہے کہ جب تک ان کے مطالبات پورے نہیں ہوتے وہ بجٹ پیش نہیں ہونے دیں گے۔ انتظامیہ نے پولیس کو صورتحال پر قابو پانے اور اسمبلی کے دروازے کھولنے کے لئے بلایا۔

اپوزیشن ارکان نے اسمبلی کا گھیراؤ کیا۔ پولیس کی بھاری نفری جائے وقوع پر پہنچی اور بکتر بند گاڑی نے اسمبلی کے دروازے کو توڑ دیا۔ اس حملے میں حزب اختلاف کے تین ممبران بھی زخمی ہوئے تھے ، اور اس جھڑپ کے دوران وزیراعلیٰ بلوچستان بھی زخمی ہوئے تھے۔

ALSO READ:

مسلم فٹبالر نے پریس کانفرنس میں سامنے رکھی بیئرکی بوتل ہٹادی

اس موقع پر حزب اختلاف کے ممبران اور ان کے کارکنوں کا پولیس سے جھڑپ ہوا ، جس کی وجہ سے زبردست ہنگامہ اور تناؤ ہوا۔ پولیس نے مظاہرین پر مظاہرین کو منتشر کرنے اور آنسو گیس کی شیلنگ کا الزام عائد کیا۔ بہر حال ، حزب اختلاف نے صوبے بھر میں احتجاج کا مطالبہ کیا۔

بلوچستان حکومت کے ترجمان لیاقت شاہوانی نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حزب اختلاف نے اسمبلی کے تقدس کو پامال کیا ہے۔

اس سے قبل وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال کی زیرصدارت کابینہ کا اجلاس ہوا۔ بجٹ میں صوبے کی محصول میں اضافہ پہلی ترجیح ہے۔

مقبول ترین خبریں

’چنائی ایکسپریس‘ میں شاہ رخ خان نے ساتھی اداکارہ کو 3سو روپے کیوں دیے؟

مسلم فٹبالر نے پریس کانفرنس میں سامنے رکھی بیئرکی بوتل ہٹادی

معاشرے میں امن تب ہوتا ہے جب طاقتور قانون کے نیچے آتا ہے، وزیراعظم

بنگلادیش کی خوبرو اداکارہ کا 4 افراد پر اجتماعی زیادتی کا الزام

گالی دیجیے لیکن خبردار! سچ بولنا منع ہے

ایک کروڑ نوکریاں دینے کی بات تو رہنے ہی دیں۔۔۔ 26 ہزار سے زائد سرکاری اسامیاں مستقل طور پر ختم وفاقی کابینہ کے اجلاس میں اہم انکشافات

اونٹ سانپ نگل کر پیاس لگنے کے بعد ھی پانی کیوں نہیں پیتا | اس کی آنکھوں سے آنے والے آنسو کس میں استعمال ہوتے ہیں ؟

بارودی سرنگیں تلاش کرنے والا ’ہیروچوہا‘ ملازمت سے ریٹائر

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *