Pakistan

سابق صدر مملکت ممنون حسین انتقال کرگئے۔

اہل خانہ کے مطابق سابق صدر ممنون حسین 2 ہفتوں سے کراچی کے نجی اسپتال میں زیر علاج تھے۔

Spread the love

سابق صدر کے بیٹے ارسلان ممنون نے بتایا کہ گزشتہ کچھ عرصے سے ان کی طبیعت نا ساز تھی اور وہ کینسر کے عارضے میں مبتلا تھے۔

ممنون حسین سال 2013 سے 2018 تک پاکستان کے صدر رہے۔ ان کا شمار مسلم لیگ ن کے سینیر رہنماؤں میں ہوتا تھا۔ صدر منتخب ہونے پر سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے ان سے حلف لیا تھا۔ انتخابات میں ان کے مدمقابل پاکستان تحریکِ انصاف کے جسٹس (ر) وجیہہ الدین تھے۔ ممنون حسین نے 432 الیکٹورل ووٹ حاصل کیے تھے۔

ممنون حسین نے 2018 کے عام انتخابات کے بعد قائم ہونے والی تحریک انصاف کی حکومت میں وزیراعظم عمران خان سے وزارت عظمیٰ کا حلف لیا تھا۔

سابق صدر ممنون 23 دسمبر 1940 کو بھارت کے شہر آگرہ میں پیدا ہوئے۔ قیام پاکستان کے بعد ان کا خاندان نقل مکانی کرکے پاکستان آ گیا۔ انہوں نے انسٹی ٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن کراچی سے گریجویٹ کیا۔ وہ پاکستان کے 12 ویں صدر تھے، جب کہ وہ گورنر سندھ کے عہدے پر بھی فائز رہے۔ ممنون حسین غیر سرگرم سیاسی شخصیت رہے ہیں۔ وہ پیشے کے لحاظ سے تاجر تھے۔

وہ نوے کی دہائی کے آخر میں پہلی بار پاکستانی سیاست کے افق پر نظر آئے اور انیس سو ستانوے میں وزیراعلیٰ سندھ کے مشیر بنائے جانے والے ممنون حسین 1999 میں نواز حکومت کے آخری ایام میں چند ماہ کے لیے گورنر سندھ بھی رہے۔ اس سے قبل ممنون حسین سال 1997 میں سندھ کے وزیر اعلیٰ لیاقت جتوئی کے مشیر بھی رہے۔

نواز شریف کی اسیری اور پھر جلاوطنی کے دوران وہ منظرِ عام پر تو نہیں تھے لیکن نواز شریف سے ان کا رابطہ ٹوٹا نہیں اور پھر ان کی وطن واپسی کے بعد ممنون حسین ایک بار پھر سندھ میں مسلم لیگ کی سیاست میں سرگرم ہوگئے تھے۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *