Poetry

تیرااندیشہ افلاکی نہیں ہے  تری پرواز لولاکی نہیں ہے

Spread the love



تیرااندیشہ افلاکی نہیں ہے
تری پرواز لولاکی نہیں ہے

یہ مانااصل شاہینی ہے تیری
تیری آنکھوں میں بےباکی نہیں ہے


تیرا تن روح سے نا آشنا ہے
عجب کیاآہ تیری نارساہے

تیری دنیا میں محکوم و مجبور

میری دنیا میں تیری پادشاہی

ترے سينے ميں دم ہے ، دل نہيں ہے
ترا دم گرمی محفل نہيں ہے
گزر جا عقل سے آگے کہ يہ نور
چراغ راہ ہے ، منزل نہيں ہے

ALSO READ:
دل گرفتہ ہی سہی بزم سجا لی جائے یاد جاناں سے کوئی شام نہ خالی جائے

Tere Ishq ki Inteha Chata houn

اگر کج رو ہیں انجم آسماں تیرا ہے یا میرا مجھے فکر جہاں کیوں ہو جہاں تیرا ہے یا میرا

Sitaron se aagy jahan aur b hai

اتنا سناٹا کہ جیسے ہو سکوت صحرا

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *