BollywoodInternationalNews

فلموں میں مذہبی جذبات مجروح کرنے والے بالی ووڈ اسٹارز

Spread the love

ممبئی: مشہور ہونا آسان نہیں کیونکہ مشہور شخصیات کی ہر چھوٹی سے چھوٹی بات اور ہر غلطی فوراً نظروں میں آجاتی ہے۔

گزشتہ کچھ برسوں میں بالی ووڈ اسٹارز کی ایک چیز جس کی وجہ سے انہیں تنقید کا نشانہ بنایا گیا وہ ہے ان اسٹارز کی وہ فلمیں جن کی وجہ سے لوگوں کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچی۔ شاہ رخ خان، دپیکا پڈوکون سے لے کر انوشکا شرما تک یہاں ان فنکاروں کے بارے میں بتایا جارہا ہے جو لوگوں کے مذہبی جذبات کو ٹھیس پہنچانے کی وجہ سے مشکلات کا شکار ہوئے۔

شاہ رخ خان بالی ووڈ کنگ شاہ رخ خان اپنی فلم ’’زیرو‘‘ کی وجہ سے مشکل میں پڑگئے تھے کیونکہ ان کے خلاف مبینہ طور پر سکھ کمیونٹی کے مذہبی جذبات کو مجروح کرنے کے لیے بومبے ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی اور درخواست میں شاہ رخ خان اور فلم ’’زیرو‘‘ کے فلمساز کے خلاف کارروائی کرنے کی درخواست کی گئی تھی۔ سکھ کمیونٹی کی جانب سے فلم کے ٹریلر کا حوالہ دیتے ہوئے اعتراض اٹھایاگیا تھا کہ کنگ خان نے فلم میں شارٹس پہنے ہیں ان کے گلے میں 500 روپے کا ہارہے اور انہوں نے گلے میں ’’کرپان‘‘ لٹکائی ہوئی ہے۔

دپیکا پڈوکونسنجے لیلا بھنسالی کی ہدایت کاری میں بننے والی سپر ہٹ فلم ’’گولیوں کی راس لیلا؛ رام لیلا‘‘ کے وقت اداکارہ دپیکا پڈوکون اور فلم کے ہدایت کار سنجے لیلا بھنسالی مشکل میں پڑگئے تھے۔ ان پر الزام لگایا گیا تھا کہ انہوں نے ہندوؤں کے مذہبی تہوار رام لیلا کو فلم میں صحیح طریقے سے نہیں دکھایا۔ جب کہ فلم ’باجی راؤ مستانی‘ پر الزام لگایا گیا تھا کہ انہوں نے فلم میں مراٹھا رہنماؤں اور کاشی بائی کو درست طریقے سے نہیں پیش کیا۔
اس کے علاوہ ہندو دائیں بازو کی کرنی سینا نے سنجے لیلا بھنسالی اور دپیکا پڈوکون کی ایک ساتھ تیسری فلم ’پدماوت‘ کے خلاف بھی بڑے پیمانے پر احتجاج کیا تھا اور فلم کے سیٹ کی توڑ پھوڑ، فلم کے خلاف پابندی کا مطالبہ کرنے سے لے کر موت کی دھمکیاں تک دی گئی تھیں۔

 

 

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *