Poetry

گرچہ تو زنداني اسباب ہے

Spread the love

گرچہ تو زنداني اسباب ہے

قلب کو ليکن ذرا آزاد رکھ

عقل کو تنقيد سے فرصت نہيں

عشق پر اعمال کي بنياد رکھ

اے مسلماں! ہر گھڑي پيش نظر

آيہ ‘لا يخلف الميعاد’ رکھ

يہ ‘لسان العصر’ کا پيغام ہے

”ان وعد اللہ حق” ياد رکھ”

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *