NewsPakistanPoliticsUrdu News

وزیراعظم کا چینی کا تمام ذخیرہ مارکیٹ میں لانے کا حکم

Spread the love

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں چینی کے تمام اسٹاک مارکیٹ میں فروخت کے لیے لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

وزیراعظم کی زیرصدارت پرائس کنٹرول اجلاس ہوا جس میں شرکا کو چینی کے اسٹاک اور قیمتوں پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اجلاس میں وفاقی وزراء حماد اظہر، فواد چوہدری، مخدوم خسرو بختیار، سید فخر امام، ڈاکٹر فروغ نسیم، مشیر خزانہ شوکت ترین، مشیر داخلہ مرزا شہزاد اکبر، معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل اور چیئرمین ایف بی آر موجود تھے۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ اس وقت ملک میں چینی کی وافر مقدار موجود ہے لیکن سندھ میں شوگر ملز بند کرنے کے فیصلے سے قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔ سندھ نے بھی گندم کے بحران میں وفاق اور باقی صوبوں کے فیصلوں سے اختلاف کیا جس کی وجہ سے ایمرجنسی لگائی گئی۔
اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ چینی کا مکمل اسٹاک مارکیٹ میں فروخت کے لیے لایا جائے گا اور 15 نومبر سے ملک بھر میں گنے کی کرشنگ شروع کی جائے گی، کرشنگ قوانین پر سختی سے عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے گا۔ ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں کے خلاف سخت قانونی کارروائی کی جائے گی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ بین الاقوامی منڈی میں اشیاء کی قیمتیں بڑھ رہی ہیں، پاکستان کا انحصار درآمدی اشیاء پر ہے، اس لیے اس کا اثر مقامی مارکیٹ پر پڑ رہا ہے۔ ہر ممکن اقدامات کر رہی ہے۔ غریبوں کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے احساس راشن، کامیاب پاکستان، کسان کارڈ، ہیلتھ کارڈ اور احساس پروگرام کی دیگر سکیمیں شروع کی گئی ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ حکومت سیاست سے بالاتر ہو کر عوام کی خدمت پر مرکوز ہے اور مہنگائی کے اثرات سے آگاہ ہے۔ عوام کے سامنے حقائق اور اعداد و شمار پیش کیے جائیں اور موثر آگاہی مہم چلائی جائے۔ ذخیرہ اندوزی اور منافع خوری کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔ ذخیرہ اندوزوں اور ناجائز منافع خوری کے مرتکب افراد کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی کی جائے۔ شوگر فیکٹریز (کنٹرول) ترمیمی ایکٹ 2021، چینی مافیا اور ذخیرہ اندوزوں کے خلاف پنجاب کی روک تھام۔ آف ہورڈنگ ایکٹ 2020 اور پنجاب رجسٹریشن آف گڈ ول ایکٹ 2014 کے تمام معاملات میں عمل درآمد کو یقینی بنائیں

ISLAMABAD: A meeting chaired by Prime Minister Imran Khan has decided to bring all sugar stocks for sale in the market.

A price control meeting was held under the chairmanship of the Prime Minister in which the participants were given a detailed briefing on sugar stocks and prices. Federal Ministers Hamad Azhar, Fawad Chaudhry, Makhdoom Khusro Bakhtiar, Syed Fakhr Imam, Dr. Forough Naseem, Finance Advisor Shaukat Tareen, Interior Adviser Mirza Shehzad Akbar, Special Assistant Dr. Shahbaz Gul and Chairman FBR were present.

The meeting was informed that at present there is an abundance of sugar in the country but the decision to close sugar mills in Sindh has pushed up prices. Sindh also disagreed with the decisions of the federation and the rest of the provinces in the wheat crisis, which led to an emergency.
It was decided at the meeting that the complete stock of sugar would be brought for sale in the market and crushing of sugarcane would be started across the country from November 15. Strict enforcement of crushing laws will be ensured. Strict legal action will be taken against hoarders and profiteers.

Addressing the meeting, the Prime Minister said that the prices of commodities are rising in the international market, as Pakistan is dependent on imported commodities, so it is having an impact on the local market. Is taking all possible steps. Ehsas Ration, Successful Pakistan, Kisan Card, Health Card and other schemes of Ehsas Program have been launched to provide relief to the poor.

The Prime Minister said that the government has gone beyond politics and is focused on serving the people and is aware of the effects of inflation. Facts and figures should be presented to the people and an effective awareness campaign should be launched. Profiteering and hoarding will not be tolerated under any circumstances. Strict action should be taken against hoarders and perpetrators of illegal profiteering as per law. Sugar Factories (Control) Amendment Act 2021, Punjab Prevention against Chinese Mafia and hoarders. Ensure implementation in all cases of Off Hoarding Act 2020 and Punjab Registration of Goodwill Act 2014

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button