NewsScience and TechnologyUrdu News

دگنی بجلی بنانے والا سولر پینل تیار

Spread the love

اوسلو: ناروے کے سوالوں نے عام سولر پینل پر گیلیم آرسین والی نینو تاروں کا استعمال کیا اس کی کارکردگی دگنی کرنے میں کامیابی حاصل کر لی۔ یعنی وہ مساوی رقبے والے عام سولر پینل کے مقابلے میں ڈیگنی بجلی بن سکتا ہے۔

واضح رہے کہ گیلیم آرسینائیڈ سے تیار شدہ، نیینومیٹر جسامت والی تاریں یعنی ’’گیلیم آرسینائیڈ نینووائرز‘‘ مائیکرو پروسیسر کو عام استعمال میں بنانے کے لیے۔

ان کی شمولیت سے سولر سیلز اور سولر پینلز کی لاگت میں شامل ہونا ضروری ہے کہ آپ ان کی کارکردگی کے ساتھ ہیں لیکن اس کا ازالہ کردے گا۔

تجارتی پیمانے پر دستیاب سلیکان سولر پینلز کی کارکردگی 15 سے 18 فیصد ہوتی ہے جو گیلیم آرسین نائنینو وائرز کے درمیان 30 سے ​​36 فیصد تک ہوتی ہے۔

دگنی کارکردگی کا مطلب یہ ہے کہ مطلوبہ بجلی بنانے کے لیے سولر سیل/ سولر پینل کا مطلوبہ رقبہ بھی آدھا رہ جائے گا۔

اس طرح بجلی کی لڑکیوں کی چھتوں کے علاوہ کھڑکوں اور سرمایہ کاری کی بالکونیوں میں بھی چھوٹے سولر پینل لگا کر زیادہ نشان لگانا۔

سولر سیل کی کارکردگی کی یہ نئی اور کم قیمت تکنیک ’’نارویجیئن یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی‘‘ کے انجان مکھرجی اور ان کے ساتھیوں نے وضع کی مختصر مدت کے تجربے میں کامیابی سے آزمایا۔

اس کی مکمل تفصیلات جرنل ’’اے سی ایس فوٹونکس‘‘ کے ایک حالیہ شمارے میں شائع ہوئی ہیں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button