Uncategorized

2nd lunar eclipse of 2021 to occur

Second lunar eclipse of 2021 to occur on November 19

Spread the love
Second lunar eclipse of 2021 to occur on November 19

This time there will be a partial lunar eclipse which will not be seen in Pakistan, Meteorological Department
The trend will start at 11:02 AM, peak at 12:19 PM and end at 5:04 PM (PST).
The first lunar eclipse of 2021 occurred on May 26.
According to Pakistan’s Meteorological Department, the second lunar eclipse of 2021 will take place on Friday, November 19.

This time it will be a partial lunar eclipse – when the earth will come between the sun and the full moon but the three are not exactly connected.

PMD says lunar eclipse will not be visible in Pakistan

The areas to be observed will be North and South America, Australia and parts of Europe. In addition, parts of Asia and northern and western parts of Africa will be able to observe it.

The Meteorological Department said the trend will begin at 11:02 a.m., peak at 12:01 p.m. and end at 5:04 p.m. (PST).

The first lunar eclipse of the year occurred on May 26. This event was a total lunar eclipse, also called “Blood Moon”, because the moon appears slightly reddish orange.

What is a lunar eclipse?
A lunar eclipse occurs when the earth moves between the sun and the moon and prevents the sun’s rays from reaching the moon directly.

Types of lunar eclipses
A total lunar eclipse occurs when the Earth’s canopy, the central and darkest part of its shadow, covers the entire surface of the moon.

A partial lunar eclipse occurs when only part of the lunar surface is hidden from the Earth’s canopy.

A pen lunar eclipse occurs when the moon passes through a faint pinnacle of the Earth’s shadow.

اس بار جزوی چاند گرہن ہوگا جو پاکستان میں نہیں دیکھا جاسکے گا، محکمہ موسمیات
رجحان صبح 11:02 بجے شروع ہوگا، 12:19 بجے چوٹی اور شام 5:04 بجے (PST) پر ختم ہوگا۔
2021 کا پہلا چاند گرہن 26 مئی کو ہوا۔
پاکستان کے محکمہ موسمیات کے مطابق 2021 کا دوسرا چاند گرہن 19 نومبر بروز جمعہ کو ہوگا۔

اس بار یہ جزوی چاند گرہن ہو گا – جب زمین سورج اور پورے چاند کے درمیان آجائے گی لیکن تینوں کو قطعی طور پر جوڑا نہیں گیا ہے۔

پی ایم ڈی کا کہنا ہے کہ چاند گرہن پاکستان میں نظر نہیں آئے گا۔

اس واقعے کا مشاہدہ کرنے والے علاقے شمالی اور جنوبی امریکہ، آسٹریلیا اور یورپ کے کچھ حصے ہوں گے۔ اس کے علاوہ ایشیا کے کچھ حصے اور افریقہ کے شمالی اور مغربی حصے اس کا مشاہدہ کر سکیں گے۔

محکمہ موسمیات نے کہا کہ یہ رجحان صبح 11:02 بجے شروع ہوگا، دوپہر 12:1 بجے عروج پر ہوگا اور شام 5:04 بجے (PST) پر ختم ہوگا۔

اس سال کا پہلا چاند گرہن 26 مئی کو ہوا۔ یہ واقعہ مکمل چاند گرہن تھا، جسے “بلڈ مون” بھی کہا جاتا ہے، کیونکہ چاند تھوڑا سا سرخی مائل نارنجی دکھائی دیتا ہے۔

چاند گرہن کیا ہے؟
چاند گرہن اس وقت ہوتا ہے جب زمین سورج اور چاند کے درمیان آجاتی ہے اور سورج کی شعاعوں کو براہ راست چاند تک پہنچنے سے روکتی ہے۔

چاند گرہن کی اقسام
مکمل چاند گرہن اس وقت ہوتا ہے جب زمین کی چھتری، اس کے سائے کا مرکزی اور تاریک حصہ، چاند کی تمام سطح کو ڈھانپ لیتا ہے۔

جزوی چاند گرہن اس وقت ہوتا ہے جب چاند کی سطح کا صرف ایک حصہ زمین کی چھتری سے چھپ جاتا ہے۔

ایک قلمی چاند گرہن اس وقت ہوتا ہے جب چاند زمین کے سائے کے دھندلے پنمبرل حصے سے گزرتا ہے۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button