Poetry

اک ہجرت کی آوازوں کا

Ali Zaryoun Poetry Collection by Ad

Spread the love

اک ہجرت کی آوازوں کا
کوئی بین سنے دروازوں کا

زکریا پیڑوں کی مت سن
یہ جنگل ہے خمیازوں کا

ترے سر میں سوز نہیں پیارے
تو اہل نہیں مرے سازوں کا

اوروں کو صلاحیں دیتا ہے
کوئی ڈسا ہوا اندازوں کا

مرا نخرہ کرنا بنتا ہے
میں غازی ہوں ترے غازوں کا

اک ریڑھی والا منکر ہے
تری توپوں اور جہازوں کا

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button